https://www.rayznewstv.com/

Share the Love


کراچی: سپریم کورٹ نے کڈنی ہل پارک، کشمیر روڈ پر کے ڈی اے افسر و دیگر تعمیرات اور الہ دین واٹر پارک سے متصل شاپنگ سینٹر اور کلب سمیت تمام تجاوزارت ختم کرنے کا حکم دیدیا۔

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں جسٹس اعجاز الحسن اور جسٹس قاضی محمد امین احمد پر مشتمل تین رکنی بینچ کے روبرو کڈنی ہل پارک تجاوزات کیس، کشمیر روڈ پر کے ڈی اے آفیسر و دیگر تعمیرات اور الہ دین واٹر پارک سے متصل شاپنگ سینٹر اور کلب سے متعلق سماعت ہوئی۔


 
چیف جسٹس آف پاکستان نے استفسار کیا کمشنر کراچی کہاں ہیں؟ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے آپ کو تمام قبضے ختم کرنے کا حکم دیا تھا، آپ سے نہیں ہوتا تو آپ کو جیل بھیج دیں گے۔ آپ پر ابھی چارج فریم کر دیتے ہیں۔کڈنی ہل پورے کا پورا خالی چاہیے۔ جائیں، اور کڈنی ہل پارک سے تمام تجاوزات کا خاتمہ کریں۔
چیف جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے ایک قبضہ ختم ہوتا ہے دوسرے دن دوبارہ ہو جاتا ہے۔ آئے دن قبضے پر قبضہ ہوجاتا ہے۔ کمشنر کراچی نے بتایا کہ ایک مسجد اور مزار باقی رہ گیا ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کس نے لیز کیا مزار اور مسجد کو؟ سیکریٹری الفتح مسجد نے بتایا کہ الفتح مسجد ایک قدیم مسجد ہے۔

عدالت نے ریمارکس دیئے اگر مسجد نبوی میں غیر قانونی زمین پر توسیع نہیں ہو سکتی تو کسی پر نہیں ہو سکتی، کڈنی ہل پارک پر کبھی مسجد اور مزار نہیں رہا۔ عدالت نے کمشنر کراچی کو تمام تجاوزات کا خاتمہ کرنے کا حکم دے دیا۔

دوسری جانب تین رکنی بینچ کے روبرو کشمیر روڈ پر کے ڈی اے کلب و دیگر تعمیرات سے متعلق سماعت ہوئی۔ عدالت نے تمام تجاوزات کا خاتمہ کرنے کا فوری حکم دیدیا۔

چیف جسٹس نے کے ڈی اے کو حکم دیا کہ جتنی مشینیں چاہیں لے کر جائیں اور سب گرائیں۔ عدالت نے کے ڈی اے کلب، اسکواش کورٹ، سوئمنگ پول و دیگر تعمیرات بھی گرانے کا حکم دیدیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کسی زمانے میں کشمیر روڈ پر بچے کھیلتے تھے۔ میں خود کشمیر روڑ پر کھیلتا رہا۔ آج اس پر سب قبضے ہو گئے۔عدالت نے کشمیر روڈ دوبارہ بچوں کے لیے کھولنے اور رائیل پارک بھی بنانے کا حکم دیدیا۔

فیصل صدیقی ایڈوکیٹ نے موقف دیا پورا کے ڈی اے افسر کلب گرا دیا گیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے میری اطلاع کے مطابق کلب اب بھی چل رہا ہے۔ الہ دین پر بھی کوئی کلب بنا دیا گیا ہے۔ یہ کے ڈی اے کلب کیا ہوتے ہیں؟ ہم نے بچپن میں ان سب میدانوں میں کھیلا ہے۔ کیا کشمیر روڈ پر سب ختم کردیا؟ وہاں ملبہ کیوں چھوڑ دیا؟ تجاوزات اب بھی ہیں تو بچے کیسے کھیلیں گے۔ کیا سپریم کورٹ خود جا کر تجاوزات کا خاتمہ کرے۔ کیا صرف اشرافیہ کے لیے سب سہولتیں ہیں۔

عدالت نے کشمیر روڈ پر تمام کھیل کے میدان بحال کرنے کا حکم دیدیا۔ اگر کوئی رکاوٹ ڈالے تو عدالتی حکم کی خلاف ورزی تصور ہوگا۔ عدالت نے سماعت بدھ تک کے لیے ملتوی کردی۔

اسی دوران سپریم کورٹ کے روبرو الہ دین واٹر پارک سے متصل شاپنگ سینٹر اور کلب بنانے کا معاملہ بھی آیا۔ عدالت نے الہ دین پویلین کلب، شاپنگ سینٹر کے خاتمے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے الہ دین پارک کو اصل حالت میں بحال کرنے کا حکم دے دیا۔ سپریم کورٹ نے الہ دین واٹر پارک سے متصل تمام کمرشل کاروبار کے خاتمے کا حکم دیتے ہوئے کمشنر کراچی سے دو دن میں عمل درآمد رپورٹ طلب کرلی۔

 

 

KARACHI: The Supreme Court (SC) has ordered removal of all encroachments on Kidney Hill Park, KDA officer and other constructions on Kashmir Road and shopping center and club adjacent to Allah Din Water Park.

Kidney Hill Park encroachment case, KDA officer and other constructions on Kashmir Road and Allah Din A hearing was held on the shopping center and club adjacent to the water park.


 
Where is the Commissioner Karachi? The Chief Justice remarked that he had ordered you to end all occupation, if not you will be sent to jail. You are now charged. Kidney Hill should be completely empty. Go, and remove all encroachments from Kidney Hill Park.
Chief Justice Gulzar Ahmed remarked that one occupation ends and the next day it happens again. The next day the occupation takes over. Commissioner Karachi said that a mosque and a shrine remain. Chief Justice remarks Who leased the shrine and mosque? Secretary of Al-Fatah Mosque said that Al-Fatah Mosque is an ancient mosque.

The court remarked that if Masjid-e-Nabawi cannot be extended on illegal land, it cannot be done on anyone. There has never been a mosque and a shrine on Kidney Hill Park. The court directed the commissioner Karachi to put an end to all encroachments.

On the other hand, a three-member bench held a hearing on KDA Club and other constructions on Kashmir Road. The court immediately ordered the removal of all encroachments.

The Chief Justice ordered the KDA to take as many machines as it wanted and drop them all. The court also ordered the demolition of KDA club, squash court, swimming pool and other structures. The Chief Justice remarked that at one time children used to play on Kashmir Road. I myself used to play on Kashmir Road. The court also ordered reopening of Kashmir Road for children and construction of a royal park.

Advocate Faisal Siddiqui said that the entire KDA Officers Club was demolished. The Chief Justice remarked that as far as I know, the club is still running. A club has also been formed on Allah Din. What are these KDA clubs? We have played in all these fields since childhood. Has everything ended on Kashmir Road? Why left debris there? The encroachments are still there, so how will the children play? Should the Supreme Court itself go and put an end to encroachments? Are all the facilities only for the elite?

The court ordered restoration of all playgrounds on Kashmir Road. Any obstruction would be considered a violation of the court order. The court adjourned the hearing till Wednesday.

Meanwhile, the issue of setting up a shopping center and club adjacent to Allah Din Water Park also came before the Supreme Court. The court ordered the demolition of Allah Din Pavilion Club, a shopping center.

The court ordered to restore Allah Din Park to its original condition. The Supreme Court ordered the closure of all commercial businesses adjacent to Allah Din Water Park and sought an implementation report from the Commissioner Karachi within two days.

 

Share the Love


Source
You Might Also Like
Comments By User
Add Your Comment
Your comment must be minimum 30 and maximum 200 charachters.
Your comment must be held for moderation.
If you are adding link in comment, Kindly add below link into your Blog/Website and add Verification Link. Else link will be removed from comment.