https://www.rayznewstv.com/

Share the Love


یونان: ہم جانتے ہیں کہ بعض پودے خطرات کے وقت خاص بو خارج کرتے ہیں جو دشمن کیڑوں کا بھگانے یا راغب کرنے میں مدد دیتی ہیں۔ اب ایسا ہی ایک کیڑا دریافت ہوا ہے جو مردہ بھنوروں کی بو خارج کرکے اپنے لیے مددگار مکھیوں کو بلاتا ہے۔

اس سے قبل ہم جان چکے ہیں کہ بعض پودے سڑے گلے گوشت اور فضلے تک کی بو خارج کرتے ہیں تاکہ اسے پسند کرنے والے صفائی پسند کیڑوں کو راغب کیا جاسکے۔ اس سے پودے کو یہ فائدہ ہوتا ہے کہ اس کے زردانے دور دور تک پھیلتے ہیں اور پھولوں کو فروغ ملتا ہے۔


 
فی الحال صرف یونان میں پایا جانے والا ایک پودا Aristolochia microstoma  ماہرین کی نظر میں آیا ہے جو مردہ بھنورے کی بو خارج کرکے خاص مکھیوں کو اپنی جانب راغب کرتا ہے۔ رنگ برنگی پھولوں والا یہ پودا زمین سے لگ کر اگتا ہے اور اس پر سوکھے پتے پڑے رہتے ہیں۔
یہ اپنی بو سے کوڑے کرکٹ یا غلاظت پر راغب ہونے والی مکھیوں کو متوجہ کرکے اپنے زردانے دوردراز پودوں تک منتقل کرتا رہتا ہے۔ اگرچہ سائنسداں اس کی بو سے تو واقف تھے لیکن اب جرمنی اور آسٹریا کے ماہرین نے اس میں ایک اور حیرت انگیز بات دریافت کی ہے۔

ماہرین نے بو پیدا کرنے والا ایک سالمہ (مالیکیول) دریافت کیا ہے جو دیگر پودوں میں نہیں ملتا۔ اس مالیکیول کی کیمیائی ترکیب 2,5-dimethylpyrazine ہے۔ ریڑھ کی ہڈی والے جانوروں میں یہ بو نہیں پائی جاتی بلکہ یہ مردہ بھنوروں کے گلنے سڑنے سے پیدا ہوتی ہے۔ خاص قسم کی میگیسیلا مکھیاں اس کی جانب راغب ہوتی ہیں جنہیں تابوت پر منڈلانے والی مکھیاں بھی کہا جاتا ہے۔

یہ مکھیاں مردہ بھنوروں کی لاش پر ملاپ کرتی ہیں اور وہیں انڈے دیتی ہیں۔ اب یہ پھول عین بھنوروں جیسی بو خارج کرکے مکھیوں کو راغب کرتے ہیں۔ وہ یہاں سے تازہ زردانے لے کر اسے دوسرے پودے تک پہنچاتی ہیں۔ تاہم دوسرا خیال یہ بھی ہے کہ یہ پودا اور اس کے پھول مکھیوں کو قریبی خوراک کے ذخائر کی نشاندہی میں بھی مدد کرتے ہیں۔

Greece: We know that some plants emit a special odor in times of danger, which helps to repel or attract enemy insects. Now such a worm has been discovered that emits the scent of dead whirlpools and calls for helpers.

We have already learned that some plants emit the smell of rotten meat and even waste so as to attract the hygienic insects that like it. This gives the plant the advantage that its yolks spread far and wide and the flowers grow.


 
Aristolochia, a plant currently only found in Greece, has been spotted by microstoma experts who attract special bees by emitting the smell of dead whirlpools. This colorful flowering plant grows close to the ground and has dry leaves on it.
It transmits its yolks to distant plants by attracting bees that are attracted to garbage or dirt by its smell. Although scientists were aware of its smell, experts in Germany and Austria have now discovered another surprising thing.

Experts have discovered a molecule that produces odors that are not found in other plants. The chemical synthesis of this molecule is 2,5-dimethylpyrazine. This odor is not found in vertebrates, but is caused by the decay of dead whirlpools. It attracts special types of magnesia flies, also known as cocoon-flying flies.

These flies mate on the carcasses of dead whirlpools and lay their eggs there. Now these flowers attract bees by emitting a vortex-like smell. She takes fresh yolks from here and carries them to other plants. However, the second idea is that the plant and its flowers also help bees to identify nearby food deposits.

Share the Love


Source
You Might Also Like
Comments By User
Add Your Comment
Your comment must be minimum 30 and maximum 200 charachters.
Your comment must be held for moderation.
If you are adding link in comment, Kindly add below link into your Blog/Website and add Verification Link. Else link will be removed from comment.