https://www.rayznewstv.com/

Share the Love


راجستھان: بھارتی تھر اور راجستھان کے میدانی علاقے میں زمین پر کھینچی گئی لکیروں کو جب بلندی سے دیکھا گیا تو ان پر ایک ڈیزائن کا گمان ہوا اور اسے زمین پر بنایا گیا سب سے بڑا خاکہ یا ڈرائنگ کہا گیا ہے جسے سائنسی زبان میں ’جیوگِلفس‘ کہا جاتا ہے۔

ماہرین کے مطابق یہ مرغولہ دار (اسپائرل) ڈرائنگ ہے جو بھارتی تھر کے علاقے بوہا اور اس کے اطراف میں دریافت ہوئی ہیں۔ اس طرح جنوبی امریکہ میں نازکا کی لکیروں کو بھی اس نے پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ پیرو میں دریافت ہونے والی ڈرائنگ ایک وسیع رقبے پر پھیلی ہوئی ہیں۔ بیل بوٹوں، جانوروں اور پودوں کی یہ زمینی ڈرائنگ 500 قبل مسیح میں کاڑھی گئی تھیں۔


کئی برس پہلے فرانسیسی باپ اور اس کے بیٹے کارلو اور یوہان اوئتیمر نے گوگل ارتھ نقشے میں اسے دریافت کیا تھا۔ اس کے بعد انہوں نے بھارت جاکر ڈرون سے اس کی عکس بندی کی تھی۔ سب سے پہلے بوہا نامی دیہات میں انہیں 2374 فٹ لمبی اور 650 فٹ چوڑی ڈرائنگ ملی۔ اگرچہ یہ ماہرین کسی جامعہ یا ادارے سے وابستہ نہیں لیکن انہوں نے کہا ہے کہ شاید یہ 150 سال پرانی ڈرائنگ ہے اور اس سے زیادہ وہ کچھ بتانہیں سکے۔

انہی ماہرین نے کہا ہے کہ اہم مقامات پر تین پتھر رکھے گئے ہیں جو ڈئزائنر کی سمجھ بوجھ کوظاہر کرتے ہیں۔ بوہا کے پاس چار بڑی علامات نوٹ کی گئی ہیں جن میں سے ہر ایک لائن 20 انچ چوڑی تھی۔ جنوب مغرب ایک اور لکیر ابھرتی ہے جو جلیبی کی طرح مرغولے کھاتی ہے اور عمودی لکیروں کی جالی میں ڈھل جاتی ہے۔  اس کےعلاوہ شمال اور جنوب مغرب میں چھوٹی ڈیزائن ہیں لیکن وقت کے ہاتھوں وہ مٹنے کے قریب ہیں۔


یہ تمام خدوخال مٹی کو کھرچ کر بنائے گئے ہیں۔ اگرساری ڈرائنگز کو ملایا جائے تو بھارتی تھر میں ان کا رقبہ دس لاکھ مربع فٹ بنتا ہے۔

 

Rajasthan: The lines drawn on the ground in the plains of Indian Thar and Rajasthan, when viewed from a height, suggest a design and are said to be the largest sketch or drawing made on the ground, which in scientific parlance is called 'Geographs'. ' is called.

According to experts, this is a spiral drawing that has been discovered in and around Boha area of ​​Indian Thar. In the same way, it has surpassed Nazca's lines in South America. The drawings discovered in Peru are spread over a vast area. These earthly drawings of vines, animals and plants were made in 500 BC.


It was discovered many years ago by a French father and his sons Carlo and Johann O'Teimer on Google Earth maps. He then went to India and filmed it with a drone. First in the village of Boha he found a drawing 2374 feet long and 650 feet wide. Although the experts are not affiliated with any university or institution, they have said that it is probably a 150-year-old drawing and could not say more than that.

The same experts have said that three stones have been placed at important places which show the understanding of the designer. Four major signs have been noted near Boha, each of which was 20 inches wide. To the southwest, another line emerges that eats chickens like jalebi and merges into a web of vertical lines. In addition, there are smaller designs in the north and southwest, but over time they are about to disappear.


All these features are made by scratching the soil. If all the drawings are combined, their area in Indian Thar is one million square feet.

Share the Love


Source
You Might Also Like
Comments By User
Add Your Comment
Your comment must be minimum 30 and maximum 200 charachters.
Your comment must be held for moderation.
If you are adding link in comment, Kindly add below link into your Blog/Website and add Verification Link. Else link will be removed from comment.