https://www.rayznewstv.com/

Share the Love


لندن: بغیر رکے مسلسل بولے جانا ویسے بھی اچھا نہیں ہوتا اور اب ایک مچھلی میں بھی یہی آداب پائے گئے ہیں۔ یہ مچھلی گفتگو کے دوران وقفے لیتی ہے لیکن اپنا پیغام بجلی کی بدولت ہی پہنچاتی ہے۔

قدرت کے کارخانے میں ہم دیکھ چکے ہیں کہ مینڈک اور پرندے بھی گفتگو کرتے ہیں اور اپنی بات چیت میں کے درمیان وقفہ یا خاموشی اختیار کرتے ہیں۔ اسی طرح مورمائرڈ یا ایلیفنٹ (ہاتھی) مچھلی بجلی کے ہلکے کمزور جھماکوں سے ایک دوسرے کو اپنا پیغام پہنچاتی ہے۔

 
یہ مچھلیاں میٹھے پانی میں رہتی ہیں اور اس کا حیاتیاتی نام Brienomyrus brachyistius ہے۔ سائنسدانوں نے دیکھا کہ یہ بجلی کے لگاتار سگنل کی بوچھاڑ کے درمیان وقفہ لیتی ہے اور مکمل خاموش ہوجاتی ہے۔ پھر یہ سلسلہ چلتا رہتا ہے لیکن جب مچھلیاں اکیلی ہوتی ہیں تو وہ بجلی کے جھماکے کم خارج کرتی ہے اور وقفہ بھی نہیں لیتیں۔


ماہرین کے مطابق جب مچھلیاں ایک دوسرے سے رابطہ کرتی ہیں تو پہلے ایک مچھلی بجلی کے جھماکے خارج کرکے خاموش ہوجاتی ہیں اور اس کے بعد دوسری اپنی بجلی بھری زبان کھولتی ہے۔ اس دوران انسانوں کی طرح چپ رہا جاتا ہے جو ایک حیرت انگیز امر ہے۔

اسی طرح ایک اور قسم کی مچھلی جمنوٹیفورمس بھی نر سے ملاپ کے وقت عین اسی طرح گفتگو کرتی ہے۔ ماہرین نے یہ بھی دریافت کیا ہے کہ فیل مچھلی خاموشی کے بعد بجلی کے جھماکے خارج کرنے میں زیادہ مستعد ہوتی ہے اور اس عمل میں اسے آسانی ہوتی ہے۔


 
ماہرین نے ایک جوڑا مچھلی کا لیا اور اس میں سے ایک مچھلی کی مصنوعی طور پر بجلی کی سرگرمی کو روک کراسے خاموش کرایا گیا، تو اسی وقت دوسری (بات کرنے والی) مچھلی کی دماغی سرگرمی بڑھنے لگی۔ عین اسی طرح کا رویہ ہم انسان بھی اختیار کرتے ہیں۔

 

London: It is not good to talk constantly without stopping and now the same etiquette has been found in a fish. This fish takes breaks during conversation but sends its message through electricity.

In the factory of nature we have seen that frogs and birds also talk and take a break or silence in their conversation. Similarly, a peacock or elephant carries its message to each other with light weak waves.

These fish live in freshwater and their biological name is Brienomyrus brachyistius. Scientists have found that it takes a break between a series of continuous electrical signals and becomes completely silent. Then it goes on, but when the fish are alone, they emit less lightning and do not take a break.

According to experts, when the fish communicate with each other, first one fish is silenced by emitting electric shocks and then the other opens its electric tongue. In the meanwhile, he is silent like a human being, which is a wonderful thing.

In the same way, another type of fish, Jamnotiformes, communicates in the same way when mating with males. Experts have also discovered that the falcon is more efficient at emitting electric shocks after silence and facilitates this process.

Experts took a pair of fish and one of them was silenced by artificially stopping the electrical activity of the fish, then at the same time the brain activity of the other (talking) fish began to increase. We humans have a very similar attitude.

Share the Love


Source
You Might Also Like
Comments By User
Add Your Comment
Your comment must be minimum 30 and maximum 200 charachters.
Your comment must be held for moderation.
If you are adding link in comment, Kindly add below link into your Blog/Website and add Verification Link. Else link will be removed from comment.