https://www.rayznewstv.com/

Share the Love


فلوریڈا: فلوریڈا میں ایک شخص مگرمچھ کے خونخوار حملے کے باوجود خوش قسمتی سے زندہ رہا، حالانکہ مگرمچھ نے ان کے بازو پر حملہ کیا تھا اور سر چبانے کی کوشش کی جس کے بعد سر پر فولادی (اسٹیپل) ٹانکیں لگوانے پڑے ہیں۔

وہ دریائے میاکا کے پانی میں قدیم شارک کے دانت کی تلاش میں سرگرداں تھے کہ انہیں محسوس ہوا کہ گویا کسی تیزرفتار بوٹ کی پنکھڑی (پروپیلر) نے ان سے رگڑکھائی ہے۔ بعد میں انہیں محسوس ہوا کہ ان کے دونوں بازو اور سر زخمی ہے جو مگرمچھ کے اچانک حملے کی وجہ سے پیش آئے ہیں۔

جیفرے ہائم نے دیکھا کہ ایک خونخوار مگرمچھ ان سے صرف چار فٹ دوری پر موجود ہے۔ پھر وہ ان کی جانب لپکا۔ اگرچہ جیفرے نے شارک سے نمٹنے کے ماہر تھے جس میں سکھایا جاتا ہے کہ اس صورتحال میں بہت تیزی سے حرکت نہیں کرنی چاہیے۔
پہلے مگرمچھ نے ان کے سرکے اوپری حصہ چبانے کی کوشش کی اور اس کے بعد بازوؤں پر حملہ کیا۔ اس صورتحال پر بعض افراد نے ایمبولینس کو بلایا جو چند لمحوں میں وہاں پہنچ گئی۔ ڈاکٹروں کے مطابق ان کی کھوپڑی غیرمعمولی مضبوط تھی اور اسی وجہ سے وہ جبڑے کی قوت سہہ گئی۔ اگر یہی جبڑا گردن یا پیٹ پر پڑتا تو ان کا بچنا محال ہوجاتا۔

 

اس دریا میں وہ قدیم بڑی شارک میگلیڈون کے دانت تلاش کرتے ہیں اور انہیں زیورات کا حصہ بناکر فروخت کرتے ہیں۔ اس کی رقم کا کچھ حصہ وہ ماحولیاتی تحفظ کے لیے خرچ کرتے ہیں۔ جیفرے نے بتایا کہ وہ ماہرغوطہ خور اور کمرشل ماہی گیر ہیں۔ اس موقع پر انہیں مگرمچھ کے ملاپ کے اوقات کو یاد رکھنا چاہئے تھا جو مئی سے جون تک جاری رہتا ہے۔

’شاید یہ مادہ مگرمچھ کا حملہ تھا جو اپنے انڈوں کی حفاظت کررہی تھی،‘ جیفرے نے کہا۔ ’اس واقعے پر میں جتنا رویا ہوں شاید زندگی میں کبھی نہیں رویا تھا، ایک تو تکلیف کی شدت تھی اور دوم موت مجھے سے چند انچ کی دوری پر تھی۔‘ تاہم اب انہوں نے اپنے علاج کے لیے انٹرنیٹ پر ایک چندہ مہم بھی شروع کی ہے۔

 

Florida: A man in Florida survived a bloody crocodile attack, although the crocodile attacked his arm and tried to chew his head, after which he had to have steel (staple) stitches on his head.

They were wandering in the waters of the Miyaka River looking for the teeth of an ancient shark when they felt as if the propeller of a speedboat had rubbed against them. He later found that both his arms and head had been injured in a sudden crocodile attack.

Jeffrey Heim saw a bloodthirsty crocodile just four feet away. Then he leaned towards them. Although Jeffrey was an expert in dealing with sharks, he taught that one should not move too fast in this situation.
The crocodile first tried to chew on the top of his vinegar and then attacked his arms. Some people called an ambulance which reached there in a few moments. According to doctors, her skull was unusually strong and that is why she endured the force of her jaw. If the same jaw fell on the neck or abdomen, it would be impossible for them to escape.

 

In this river they find the teeth of the ancient giant shark Magellan and sell them as part of jewelry. They spend some of that money on environmental protection. Jeffrey said he is an expert diver and commercial fisherman. At this point they should have remembered the crocodile mating times which lasted from May to June.

"It was probably a female crocodile attack that was protecting her eggs," Jeffrey said. "I have probably never cried in my life as much as I have cried over this incident. One was the severity of the pain and the other was the death a few inches away from me." Of

Share the Love


Source
You Might Also Like
Comments By User
Add Your Comment
Your comment must be minimum 30 and maximum 200 charachters.
Your comment must be held for moderation.
If you are adding link in comment, Kindly add below link into your Blog/Website and add Verification Link. Else link will be removed from comment.