https://www.rayznewstv.com/

Share the Love


تل ابیب: پاکستان کی جانب سے نہتے فلسطینیوں پر جاری اسرائیلی ظلم و بربریت کو دنیا کے سامنے لانے کے لیے کی جانے والی کاوشوں سے اسرائیل بلبلا اٹھا ہے۔

پاکستان نے غزہ اور نہتے فلسطینیوں پر اسرائیلی طیاروں کی 11 روز تک جاری رہنے والی وحشیانہ بمباری کو روکنے کے لیے اقوام متحدہ سمیت دنیا بھر میں بھرپور کردار ادا کیا اور اسرائیلی جارحیت پر دو ٹوک موقف اپناتے ہوئے دنیا کے سامنے اسرائیلی جنگی جرائم کو بے نقاب کیا جس پر نہ صرف عالمی میڈیا بلکہ مسلم ممالک سمیت دیگر ممالک کے رہنماؤں نے بھی فلسطینیوں پر اسرائیلی بربریت کی شدید مذمت کی۔

 
اس خبر کو بھی پڑھیں : اقوام متحدہ میں اسرائیل کے خلاف پاکستان کی قرارداد منظور
وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے ہنگامی دوروں، عالمی رہنماؤں سے ملاقات اور اقوام متحدہ جنرل اسمبلی اجلاس میں کی گئی تقریر نے مسئلہ فلسطین پر نہ صرف دنیا کے ضمیر کو جنجھوڑ کر رکھ دیا بلکہ عالمی میڈیا بھی اس معاملے پر خاموش نہ رہ سکا، وزیر خارجہ کی کاوشوں سے طاقت کے نشے مست اسرائیل کو شدید دھچکا پہنچا اور مجبوراً اسرائیلی وزیراعظم نے سیز فائر کا اعلان کیا۔

 

گزشتہ روز بھی پاکستان کی ہی کاوشوں کے باعث اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے اجلاس میں پاکستان کی قرارداد کو بھاری اکثریت سے منظور کرتے ہوئے غزہ کے علاقے میں اسرائیلی بمباری کے دوران انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور جنگی جرائم سے متعلق عالمی تحقیقات کا اعلان کیا گیا، پاکستانی حکومت کی جانب سے مسئلہ فلسطین پر بھر پور آواز اٹھانا اسرائیلی حکومت کو ایک آنکھ نہ بھایا جس پر اب اسرائیل نے بھی بھارت کی طرح پاکستان کے خلاف زہر اگلنا شروع کردیا ہے۔


اسرائیلی وزارت خارجہ کے ڈائریکٹر جنرل ایلون اشیز جو بھارت میں اسرائیلی سفیر کے طور پر بھی خدمات انجام دے چکے ہیں، ٹوئٹر پر پاکستان کے خلاف زہر اگلتے ہوئے کہا کہ انسانی حقوق کا چیمپئین پاکستان خود شیشے کے گھر میں رہتا ہے، اقوام متحدہ میں مشرقی وسطیٰ کی واحد جمہوریت کو درس دے رہا ہے، یہ منافقت کی اعلیٰ مثال ہے۔

اسرائیلی وزارت خارجہ کے ڈائریکٹر نے پاکستانی وزارت خارجہ کے آفیشل اکاؤنٹ پر اسرائیلی کے خلاف اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کے اجلاس سے متعلق کی گئی ٹوئٹ پر جواب دیتے ہوئے یہ ٹوئٹ کی تھی جب کہ اس بیان کو خود اسرائیلی وزارت خارجہ نے بھی ری ٹوئٹ کیا ہے۔

 

Tel Aviv: Israel's efforts to expose Israeli atrocities against unarmed Palestinians to the world have raised eyebrows in Israel.

Pakistan has played a key role around the world, including the United Nations, in stopping the 11-day barbaric bombardment of Gaza and unarmed Palestinians by Israeli warplanes, and has taken a firm stand on Israeli aggression, exposing Israeli war crimes to the world Not only the world media but also the leaders of other countries including Muslim countries strongly condemned the Israeli barbarism against the Palestinians.

 
Read this news item: Pakistan passes resolution against Israel in UN
Foreign Minister Shah Mehmood Qureshi's emergency visits, meetings with world leaders and his speech at the UN General Assembly not only shook the conscience of the world on the issue of Palestine but also the international media could not remain silent on the issue, the Minister said. Foreign efforts have dealt a severe blow to the power-hungry Israel, forcing the Israeli prime minister to declare a ceasefire.

 

Yesterday, due to Pakistan's own efforts, the UN Human Rights Council unanimously approved Pakistan's resolution and announced a global investigation into human rights violations and war crimes during the Israeli bombing of the Gaza Strip. Yes, the Pakistani government's full voice on the issue of Palestine did not go unnoticed by the Israeli government, which has now started vomiting poison against Pakistan like India.


Israeli Foreign Ministry Director General Elon Ashes, who has also served as Israel's ambassador to India, took to Twitter to lash out at Pakistan, saying that human rights champion Pakistan itself lives in a glass house. Teaching the only democracy in the Middle East is a prime example of hypocrisy.

The director of the Israeli Foreign Ministry responded to a tweet on the official account of the Pakistani Foreign Ministry regarding the UN human rights meeting against Israel, while the statement was retweeted by the Israeli Foreign Ministry itself. Is.

Share the Love


Source
You Might Also Like
Comments By User
Add Your Comment
Your comment must be minimum 30 and maximum 200 charachters.
Your comment must be held for moderation.
If you are adding link in comment, Kindly add below link into your Blog/Website and add Verification Link. Else link will be removed from comment.